128

بھارتی مقبوضہ جموں کشمیر میں کرفیو کے دروان اب تک چار ہزار سے زائد کشمیری گرفتار

معروف عالمی خبر رساں ادارے اے ایف پی نے حکومتی ذرائع کے حوالے بتایا ہے کہ بھارتی فورسز نے پانچ اگست سے اب تک کرفیو کے دوران چار ہزار سے زیادہ کشمیریوں کو گرفتار کیا ہے۔

گرفتار ہونے والے تمام سیاسی رہنما اور متحرک سیاسی کارکن ہیں۔تقریباً تمام ہی گرفتار ہونے والوں کا تعلق مقبوضہ وادی کے بڑے شہروں سے ہے۔

انہیں بدنام زمانہ اور انسانیت سوز پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ چار ہزار کا عدد بھارت کے حکومتی ذرائع کے حوالے سے ہے۔

نسانی حقوق کے کارکنان کا کہنا ہے کہ گرفتار ہونے والے بارہ ہزار سے زیادہ ہیں۔

اسی طرح بیس ہزار سے زیادہ کشمیری نوجوانوں کو فوجی کیمپوں میں بغیر گرفتاری کے پابند کیا ہوا ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی حکومت نے دعویٰ کیا ہے کہ کچھ علاقوں میں لیند لائن جزوی طور پر بحال کی گئی ہے۔

کشمیر سے باہر مقیم کشمیریوں نے بھارتی حکومت کے سروس کی بحالی کے دعوے کو جھٹلایا ہے۔ ان کا کہنا ہے ہے ان کی گھر والوں سے اب تک بات نہیں ہو سکی ہے۔