193

بھارتی مقبوضہ جموں کشمیر: حالیہ برف باری سے چار لاکھ سے زائد باغ مالکان کو نقصان

مقبوضہ کشمیر میں حالیہ تباہ کن برفباری سے 4 لاکھ 65 ہزار 376 باغ مالکان شدید نقصان سے دوچار ہوئے ہیں جن میں شعبہ باغبانی کی 154972 ہیکٹراراضی بھی شامل ہے۔

کشمیر کے دس اضلاع میں شوپیاں، کولگام اور بارہمولہ کے باغبانوں کو سب سے زیادہ نقصان اٹھانا پڑا ہے جہاں 38 فی صد باغوں کو نقصان ہوا ہے۔گاندربل، پلوامہ، اننت ناگ، بڈگام، کپوارہ اور بانڈی پورہ میں 35 فی صد جبکہ سرینگر میں 22 فی صد باغات برف باری سے متاثر ہوئے ہیں۔مقبوضہ کشمیر میں محکمہ باغبانی کے ڈائریکٹر اعجاز احمد بٹ نے برف باری سے ہونے والے نقصان کی تفصیل فراہم کرتے ہوئے کہا کہ کشمیرمیں 210698 ہیکٹئر اراضی زمین پر سیب کی کاشتکاری کی جا رہی ہے جس میں 154972 ہیکٹر اراضی برف باری سے بری طرح اثر انداز ہوئی ہے۔

ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق انہوں نے کہا کہ محکمہ باغبانی اور محکمہ مال مل کر اس پورے نقصان کا بھر پور طریقے سے تخمینہ لگا کر کاشتکاروں کو معاوضہ فراہم کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ معاوضے کے علاوہ کاشتکاروں کو باغبانی کا سامان، پودے وغیرہ فراہم کیے جائیں گے۔ڈائریکٹر ہارٹیکلچر نے نے مزید کہا کہ سرکار ایس ڈی ار ایف کے زمرے میں حالیہ برف باری کو قدرتی آفت قرار دے گی جس سے کاشتکاروں کی معاونت بھی کی جائے گی۔