315

بھارتی زیر انتظام کشمیر1989 سے اب تک 30 سالوں میں42 ہزار لوگ ہلاک ہوئے: بھارتی وزیر داخلہ

بھارت کی وزارت داخلہ کے اعدادوشمار کے مطابق 1990 کے بعد سے جموں و کشمیر میں جاری تشدد کے دوران 71 ہزار 38 واقعات میں 41 ہزار 866 افراد ہلاک ہوئے۔

وزارت نے کہا کہ ہلاک شدہ افراد میں 14 ہزار38 عام شہری، 5ہزار 292 سکیورٹی اہلکار اور 22ہزار 536 عسکریت پسند تھے۔

خبر رساں ادارے ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 1990 کی دہائی کے دوران عسکریت پسندی عروج پر تھی اور ہر سال 3 سے 6ہزار کے درمیان واقعات پیش آ تے رہے۔ گذشتہ 10 برسوں میں ہر سال ان واقعات کی تعداد میں 500 کی کمی رپورٹ کی گئی۔

عالمی خبررساں ادارے ساؤتھ ایشین وائر نے ان اعدادوشمار کو گمراہ کن بتاتے ہوئے کہا ہے کہ اسی عرصے کے دوران کم از کم 95450 افراد کو شہید کیا گیا۔ جن میں کثیر تعداد معصوم شہریوں کی تھی۔

کشمیر میڈیا سروس کی ویب سائٹ کے مطابق 1989 سے اب تک 95464 افراد ہلاک ہوئے ہیں جو کہ بھارتی وزیر داخلہ کی بتائی ہوئی تعداد سے کہیں زیادہ ہے۔