92

سیز فائر لائن پر کشیدگی کی وجہ سے ہزاروں خاندان ہجرت کر رہے ہیں:سابق وزیر تعلیم میاں وحید

مظفرآباد (کشمیریت) سابق وزیر تعلیم آزاد کشمیر نے جیو ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا ہے کہ سیز فائر لائن سے ہزاروں خاندان دو طرفہ کشیدگی کی وجہ سے ہجرت کرنے پر مجبور ہیں

انہوں نے کہا کہ بھارت اور پاکستان میں کرتار پور اور دیگر بین القوامی سرحد پر تو امن ہے لیکن سیز فائر لائن پر مسلسل فائرنگ ہو رہی ہے اس دو عملی کی وجوہات کیا ہیں؟

سابق وزیر تعلیم میاں عبد الوحید میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں

انہوں نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ سیز فائر لائن کے خلاف ورزیوں اور دونوں اطراف سے گولا باری کو فی الفور بند کیا جائے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر سیز فائر لائن پر گولہ باری بند نہیں ہو سکتی تو کم از کم سیز فائر لائن کے مکینوں کو پاکستان فوج جتنی سہولیات مہیا کی جائیں۔

واضح رہے ہیں سیز فائر لائن پر دو طرفہ فائرنگ اور گولا باری کی وجہ سے حالیہ ہفتوں میں سینکڑوں افراد نے آزاد کشمیر اور پاکستان کے دیگر شہروں کی جانب رخ کیا ہے۔ جبکہ حالات انتہائی کشیدہ ہونے کی وجہ سے مزید ہزاروں خاندان بھی نقل مکانی پر مجبور ہو رہے ہیں۔